Menu
Top Rated Posts ....
Search

کراچی: سیلابی ریلے میں ڈوبنے والے انجینئر کی اہلیہ اور بیٹا سپرد خاک

Posted By: Azeem Tariq on August 07, 2013 | 03:15:13





کراچی: گلبرگ کے سیلابی ریلے میں ڈوبنے والے انجینئر کی اہلیہ اور بیٹے کو سپرد خاک کردیا گیا جبکہ انجینئر کی لاش کی تلاش کا کام بند کردیا گیا ۔
اس حوالے سے کوئی موثر کارروائی دیکھنے میں نہیں آئی، علاقے میں سوگ کی فضا چھائی رہی ، اہلیہ اور بیٹے کی نماز جنازہ و تدفین میں عزیز و اقارب کے علاوہ متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے ارکان ، قومی و صوبائی اسمبلی کے اراکین ، علاقائی عہدیدار اور کارکنان کی بڑی تعداد نے بھی شرکت کی ، تفصیلات کے مطابق ہفتہ کی شب گلبرگ کے علاقے میں بفرزون کے بی آر سوسائٹی کے قریب نالے میں کار ڈوب گئی تھی ، کار میں انجینئر مظفر ، ان کی اہلیہ یاسمین اور ڈیڑھ سالہ بیٹا عبیر موجود تھے ، انتظامیہ 3 روز تک سوتی رہی ۔
کرائے پر شاول منگوایا گیا جوکہ ڈیزل ختم ہوجانے پر کام بند کردیتا تھا ، نالے کی صفائی کے علاوہ کوئی کام نہیں کیا گیا ، 3 روز کی سخت جدوجہد کے بعد پیر کی شب پاک بحریہ کے غوطہ خوروں نے کار کا سراغ لگایا جس کے بعد کار کو باہر نکالا گیا ، کار سے انجینئر مظفر کی اہلیہ یاسمین اور ان کے ڈیڑھ سالہ بیٹے عبیر کی لاشیں ملیں جبکہ مظفر کی لاش نہ مل سکی ، اس سلسلے میں منگل کو جائے وقوع پر کوئی آپریشن دیکھنے میں نہیں آیا ، متاثرہ اہل خانہ کا کہنا ہے کہ انھیں آج (بدھ) دوبارہ آپریشن شروع کرنے کا کہا گیا ہے۔
علاوہ ازیں یاسمین اور ان کے صاحبزادے عبیر کو گزشتہ روز نارتھ کراچی میں واقع محمد شاہ قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا ، نماز جنازہ و تدفین میں متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے ارکان ، قومی اور صوبائی اسمبلی کے ارکان ، علاقائی عہدیداران اور کارکنوں کے علاوہ علاقہ مکینوں کی بھی بڑی تعداد شریک تھی ، قبل ازیں رہائش گاہ سے جنازے اٹھنے پر کہرام مچ گیا اور خواتین کی آہ و بکا کے باعث موقع پر موجود ہر آنکھ اشکبار ہوگئی ، اس موقع پر انتہائی رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے ، علاقے میں سوگ کی فضا چھائی رہی۔


Source: Express News


Comments...
Advertisement





Follow on Twitter

Advertisement


Popular Posts